سو لفظی کہانی : “سوہنی دھرتی” از محمد انس حنیف

اُس کا پوتا لائق ڈاکٹر تھا. ہائوس جاب کے بعد اسی قابلیت کی بنا پر اس نے انگلینڈ جاب کیلئے اپلائی کیا تھا. ” اس ملک نے تمہیں پہچان دی اور تم اِسے چھوڑ کر انگریزوں کی غلامی کرنا چاہتے مزید پڑھیں

افسانچہ : “لاپروائی” از ریما نور رضوان.

“اےمیڈم !پیسے دے دے نا”, وہ اپنی شاندار گاڑی میں بیٹھی تھی تو مانگنے والی معصوم بچی آگے پیچھے پھیرنے لگی تھی, “میڈم!کھانا کھائوں گی, پانچ روپے دے دے”۔ “پانچ سو کا پیٹرول دال دو”, میڈم نے پیٹرول پمپ پر مزید پڑھیں

افسانچہ : “یار کو ہم نے جا بہ جا دیکھا”.

تحریر : شمسہ فیصل. “وصل یار” زندگی سے زندگی تک کا سفر اور “فراق یار” فنائی سے موت کے بعد تک کی اذیت،، “کیا ہے یہ محبت؟”،لبوں پہ اُترے تو شیرینی اور اندر تک جائے تو زہر.. “آہ! محبت کو مزید پڑھیں

منٹونستان : یوم کشمیر کیلئے ’’ٹیٹوال کا کُتا‘‘

تحریر : سعادت حسن منٹو. کئی دن سے طرفین اپنے اپنے مورچے پر جمے ہوئے تھے۔دن ادِھر اور اُدھر سے دس بارہ فائر ہوجاتے ،جن کی آواز کے ساتھ کوئی انسانی چیخ بلند نہیں ہوتی تھی۔ہوا خُردرَو پھولوں کی مہک مزید پڑھیں

افسانچہ : “داغ زندگی”.

تحریر : عالیہ چودھری حقیقت اپنے آئینے کو اٹھائے انسانوں کی خواہشوں کے سامنے پھرتی رہے تب بھی ہر شخص اس میں اپنے عکس کو دیکھنے سے کتراتا ہے۔ فریب کی لذت ہی چاہ کو تسکین دیتی ہے۔ جوگی کا مزید پڑھیں

ھم تو اس ریٹنگز کے ہاتھوں…!!

تحریر : محمد یاسر. اکثر فلموں،ڈراموں،کہانیوں میں کرداروں کو محبت کے ہاتھوں موت کے گھاٹ اترتے دیکھا اور پڑھا تھا ،بہت ہنسی آتی تھی ایسے مناظر دیکھتے ہوئے جن میں ہیرو ہیروئین ساتھ جینے اور مرنے کی قسمیں کھاتے ہیں مزید پڑھیں