افسانچہ : “کیا میں مائیکل بن گیا؟”۔

تحریر :         بلال حسین  وہ دروازے پر کھڑی ہوئی کسی کو سمجھا رہی تھیں اور وہ بے بس بیچارا بھی سمجھانے کی کوشش کر رہا تھا اور احسان مندی کے بوجھ تلے دبا جا رہا تھا ۔ میں اسی مزید پڑھیں

رمضان کہانی : ترغیب از محمد یاسر.

اُس نے بے حد حیرانی سے باپ کا چہرہ دیکھا تھا،حیرت اِس بات کی نہیں تھی کہ وہ بیٹھاچکن کی لیگ پیس نوچ نوچ کر کھاتے ہوئے مسلسل اُسے گالیاں دے رہا تھا۔ چپڑ چپڑ چپڑ۔ تیری ایسی کی تیسی۔ مزید پڑھیں

ناولٹ :”گھائو” از نعمان محمد۔

“انسان کا پیدا ہونا اور پھر مرجانا،یہ اُس کے اپنے اختیار میں نہیں لیکن اس پیدائش اور مرنے کے درمیانی وقفے میں جو کچھ بھی ہوتا ہے یا وہ کرتا ہے یہ سب اُس کے اپنے اختیار میں ہوتا ہے،چوائس مزید پڑھیں

ناولٹ : “ہر رگ میں ہے محشر برپا” از ریما علی سید۔

تحریر : ریما علی سیّد ہسَپتال میں بستر پر لیٹا ہوا دنیا کا ہر مریض اپنے لئے شفاء مانگتا ہے،اُس تکلیف سے نجات مانگتا ہے جس نے اُس کے سانس لینے کے عمل تک کو دُشوار بنایا ہوتا ہے،خواہ اس مزید پڑھیں