کلمہ سنا کر یقین دلانا پڑا کیونکہ رواداری کو کٹر پن کھا گیا تھا

“بنتِ ارسلان” “میں شاکڈ حالت میں بیٹھی اُسے دیکھ رہی تھی وہ اپنے عقیدے بارے کیا کیا بتاتی رہی مجھے کوئی آوازسنائی نہیں دے رہی تھی بس میرا ذہن یہی سوچ رہاتھا کہ آگاہی عذاب ہوتی ہے” “میں جب اپوا مزید پڑھیں

دُھندلا آئینہ : “مجھے اس Harassment سے بچائو” از عروج بنت ارسلان.

ڈیر فیس بک یوزر، مجھے فیس بک استعمال کرتے ہوئے اگلے ماہ دس سال ہو جائیں گے، میں اپنے بارے میں تھوڑا سا بتا دوں کہ میں اپنے گھرانے کی واحد لڑکی ہوں جو میڈیا میں آئی وہ بھی شدید مزید پڑھیں

ناولٹ : “وہی ایک سجدہ”۔

تحریر :عائشہ احمد “سر! میں نے شہر کے تمام بڑے میڈیکل سٹورز سے بات کی ہے اور چند ایک کے سوا سب سےہی معاملات طے ہوگئے ہیں وہ بھی ہماری شرائط پر”۔وقار کا چرب زبان سیکرٹری اپنی کارکردگی کی تفصیلات مزید پڑھیں

ذرا یاد کر

ذرا یاد کر میرے ہم نفس میرا دِل جو تم پہ نثار تھا وہ ڈرا ڈرا سا جو پیار تھا تیرے شوخ قدموں کی دھول تھی تیرے قافلے کا غبار تھا ذرا یا د کر  ذرا یاد کر  ذرا یاد مزید پڑھیں

لاؤ اپنے عشق کی لو ۔

1947 ایک تاریخ ساز سال،ایک ایسا سال جس نے دنیا کا منظر نامہ ہی بدل کر رکھ دیا، اگست14 August 1947 کی کبھی نہ بھلائے جا سکنے والی تاریخ جب دنیا کے نقشے پر دنیا کی پہلی نظریاتی اور دوسری مزید پڑھیں

اے وطن پاک وطن.

اے اے وطن پیارے وطن. اے وطن پاک وطن. پاک وطن پاک وطن. اے میرے پیارے وطن. تجھ سے ہے میرے تمنائون کی دنیا پُرنور. عزم میرا ہے قوی میرے ارادے ہیں غیور. میری ہستی میں انا ہے میری مستی مزید پڑھیں