“ﺟﺐ ﮐﭽﮫ ﻧﮧ ﺑَﻦ ﺳﮑﺎ ﺗﻮ، ﻣِﺮﺍ ﺩﻝ ﺑﻨﺎ ﺩﯾﺎ “

ﮨﻨﺪﻭﺳﺘﺎﻥ ﻣﯿﮟ ﺍﯾﮏ ﺟﮕﮧ ﻣﺸﺎﻋﺮﮦ ﺗﮭﺎ۔ ﺭﺩﯾﻒ ﺩﯾﺎ ﮔﯿﺎ : ” ﺩﻝ ﺑﻨﺎ ﺩﯾﺎ ” ﺍﺏ ﺷﻌﺮﺍﺀ ﮐﻮ ﺍﺱ ﭘﺮ ﺷﻌﺮ ﮐﮩﻨﺎ ﺗﮭﮯ۔ ﺳﺐ ﺳﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﺣﯿﺪﺭ ﺩﮨﻠﻮﯼ ﻧﮯ ﺍﺱ ﺭﺩﯾﻒ ﮐﻮ ﯾﻮﮞ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﯿﺎ ﺍﮎ ﺩﻝ ﭘﮧ ﺧﺘﻢ، ﻗﺪﺭﺕِ مزید پڑھیں

ساغر صدیقی

ساغر صدیقی

ایک وعدہ ہے کسی کا جو وفا ہوتا نہیں ورنہ ان تاروں بھری راتوں میں کیا ہوتا نہیں جی میں آتا ہے الٹ دیں انکے چہرے سے نقاب حوصلہ کرتے ہیں لیکن حوصلہ ہوتا نہیں شمع جس کی آبرو پر جان دے مزید پڑھیں

کلام : “میں نے کب تم سے کہا”, علی زاریون.

Ali Zaryoun

میں نے کب تم سے کہا ،دیوتا مانو مجھ کو میں نے کب تم سے کوئی نذرِ عقیدت چاہی میں نے تا عمر فقط اسمِ محبّت لکّھا میں نے چاہی بھی تو انسان کی عزّت چاہیہاں مِرا جرم کہ میں مزید پڑھیں

غزل :ذ ہین لوگ ترقی کی آس ہوتے ہیں”, شہزاد قیس

Shahzad Qais

،اَگرچہ شہر میں کُل سو ، پچاس ہوتے ہیں،ذَہین لوگ ترقی کی آس ہوتے ہیں،لکیر کے ہیں فقیر اَوّل آنے والے سبھی،ذَہین بچے ذِرا بدحواس ہوتے ہیں،جو اِن کو کچھ کہے ، خود آشکار ہوتا ہے،ذَہین ، پانی کا آدھا مزید پڑھیں

انشاء جی کی یاد میں “چل انشاء اپنے گاؤں” ں

gaoun

چل انشاء اپنے گاؤں میں بیٹھیں گے سُکھ کی چھاؤں میں یہاں اُلجھے اُلجھے رُوپ بہت پر اصلی کم، بہرُوپ بہت اس پیڑ کے نیچے کیا رُکنا جہاں سایہ کم ہو، دُھوپ بہت چل انشاء اپنے گاؤں میں بیٹھیں گے مزید پڑھیں